Disscussion Form for adult stories

Join the site free of cost and add your stories here.. Sexy Kahaniya


Sunday, 30 August 2015

ورجن بہن Urdu sex story 2

تبدیل کر دیا میں لینے شروع کر دیا اس سے تصاویر کو زیادہ کثرت سے. تو اس تہوار کے دن پر میری بہن کے نئے سکرٹ پہنے تو اس نے مجھ سے پوچھا کہ اس کے بہت سے تصاویر لے گیا تھا.
اب میں ایک چارہ کے طور پر اس کے لئے کچھ زیادہ کرنے کے لئے استعمال کرنا چاہتا تھا. میرے والد اور ماں کے رشتہ داروں سے ملنے اور تہوار کے دن پر انہیں مبارک دینے کے لئے باہر چلے گئے تو ہم اکیلے تھے. لہذا میں نے پنکی نے کہا کہ وہ اپنے والدین کے کمرے کے اندر آنے کے بعد اسے تھوڑا صاف تھا اور تصاوير اچھا نظر آئے گا. اس نے قبول کر لیا. پھر میں نے اس کے دو جواب گولی مار دی اور اس سے کہا تھا کہ یہ ختم ہو گیا تھا. کہا کہ کہ میں اپنے والدین کے بستر پر گئے اور وہاں بیٹھ گئے
اب پنکی میرے پاس آیا اور مجھ سے مزید تصاویر لینے کے لئے مجبور شروع. وہ بھیا کی طرح گیا تھا جو اجازت دیتا ہے، دوسری براہ مہربانی چند تصاویر لے، میں نے انہیں اپنے دوستوں کو دکھانے کے لیے کیا کرنے کی ضرورت ہے “وغیرہ میں میرے پاس بیٹھ کر پوچھا، تو اس نے کیا لیکن وہ اصل میں بستر پر پڑا گئے. تو میں نے کہا میں سکھاؤنگی اس کیمرے تا کہ وہ اس کی اپنی تصویر لے سکتے ہیں کہ کس طرح کام وہ ٹھیک کہا اور حوصلہ افزائی کی تھی اور اس کے بعد میں نے اس کے ہاتھوں میں کیمرے دی.

اور وہ تمام اختیارات اور میں نے تقریبا جلا کے ساتھ آہستہ آہستہ دل میرے ہاتھوں کو اپنے پیروں پر رکھا مشاہدہ کیا گیا تھا. اور وہ اس رد عمل کا اظہار نہیں کیا تو میں دکھاوا ہے جیسے اگر میں نے اس سے کچھ گندگی تشریح کر رہا ہوں اور میرے ہاتھ اس سکرٹ کے اندر اس کی رانوں کی طرف آگے بڑھ رہے ہیں اپ پر رکھا گیا تھا. وہ مصروف تھا کیمرے میں دیکھنے کے اور میری باتوں سے چھین لیا. اس کے علاوہ وہ تھوڑا معصوم اور نادان رویے سے اس طرح محسوس کرنے کے لئے تھا. لیکن اب میں اس کی رانوں پر تقریبا میرے ہاتھ آگے بڑھ رہے ہیں اور میرے کامپ انگلیاں اچانک اس لڑکی کو چھو لیا. وہ مورخ میں ہلا کر رکھ دیا تھا. اور بھیا نے کہا کہ آپ کیا کر رہے ہیں. آپ مجھ پر وہاں سے چھو کیوں کی کوشش کر رہے ہیں. پھر میں نے کہا کہ اگر آپ نے کیمرے کو جاننا اور اپنے آپ کو زیادہ جواب لے چاہتا ہوں بس چپ رہو. وہ سب سے پہلے یہ اور اس نے کہا اور آخر میں اس نے ٹھیک کہا. یہ اس کی جہالت کا تھا اور وہ جانتی نہیں کیا غلطیوں اور لطف کہ ہاں مراد واحد تھا.
اب وہ کیمرے کا انعقاد کیا گیا تھا اور میں نے اس کی کمر سے اوپر اس کے سکرٹ ہٹانے کی طرف سے اس کی رانوں پر کھل کر محسوس کرنا شروع کر دیا. وہ شرم محسوس کیا گیا تھا اور مسکرا. پھر میں نے اس جاںگھیا نکالا نیچے اور اس خوبصورت انتخاب بلی ہونٹ محسوس کیا ہے جس میں ہلکے بالوں کی طرف سے احاطہ کرتا ہے. یہ ریشم اور اچانک ہم اپنے گھر میں طاقت کھو کی طرح تھا. چونکہ یہ رات کے 8 بجے کے ارد گرد تھے، ہمارے کمرے سیاہ گئی اور میرے اندر جانور کو پنکی بلی میں نے میرے سر کو دھکا دے دیا.
میں نے اس لڑکی کے ہونٹوں پر میری جیب رکھا اور ان کو اچھی چاٹ لیا تھا. یہ صاف اور نرم تھا. مجھے گہری اور گہری گئے. اب وہ کیمرے کو ایک طرف رکھا اور لمحے سے لطف اندوز شروع کر دیا. میں نہیں جانتا کہ یہ کس طرح ہوتا ہے لیکن جنس ایک قدرتی عمل ہے اور یہ کوئی تربیت نہیں کی ضرورت ہے. وہ میرے سر کا انعقاد کیا گیا تھا اور میرے بال ھیںچ جیسا کہ میں نے اس بلی چاٹ لیا تھا. پھر میں نے اسے نکالا نیچے اس کی ٹانگوں کے انعقاد کی طرف سے اور اسے اس کے ہونٹوں پر بوسہ لينا شروع کر دیا.


Read more: http://sexykahaniya.biz/viewtopic.php?f=27&t=1056&sid=dc894c0e01cc398f5bd691562a78be75#ixzz3kHciq4Ou
Follow us:
@theadultstories on Twitter | theadultstories on Facebook


ورجن بہن Urdu sex story 1

میری پیاری چھوٹی بہن کی پنکی اور ہمارے جنسی تعلقات کے ساتھ تھا. پنکی اس کے 10 معیار میں تھا اور میں میری انٹرمیڈیٹ کر میں تھا. ہم نے پونے کے مصروف سڑکوں کے باشندوں تھے. میں اس کے ساتھ شروع کرنے کے لئے کسی بھی جنسی تجربہ نہیں تھا اور میں بہت زیادہ جنسی اور عورت جنسی اعضاء اور
سب کچھ کے ساتھ پاگل تھی. یہ میری روایتی خاندان کی وجہ سے مجھے لگتا ہے. ہماری روایتی اور خاندان کو ہمیشہ مجھے اور جنس یا عریانیت سے متعلق کچھ کے بارے میں اپنے جذبات کو کنٹرول کرنے میں ہوشیار تھا. میری ماں اور بہن کو واپس اوپر کے کمرے کے دروازے کو جب وہ باتھ روم میں غسل کر رہے ہیں کو بند کرنے کا استعمال کیا تھا اور یہاں تک کہ وہ کپڑے پہن کر لی نہیں کھولنے. یہ میرے گھر پر صورت حال تھی. اگرچہ میں جنس کے ساتھ پاگل کیا گیا تھا میں درار کے لئے شہر کے چاروں طرف دیکھنے کی کسی اوسط آدمی کی طرح استعمال کیا. میں نے میگزین سے ابینےتریوں کو بے نقاب کرنے کی تصاویر کاٹ اور انہیں میرے بٹوے میں رکھ کرتے تھے.


یہ زنی کے انزال ہوجانے کی شکایت ہے آج رات کے لئے یا شاور میں تھا. ہم نے ایک درمیانے طبقے کے خاندان میں نیلے فلموں کو دیکھنے میں خرچ کرنے کے لئے ایک کمپیوٹر میں میرے گھر پر نہیں تھا جب سے یہ بہت پہلے ہوا تھا کافی پیسے مل نہیں تھے. یہاں تک کہ ان حالات میں میں نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ میں ایک جنسی شے کے طور پر بہن کے بارے میں سوچنا ہوگا. لیکن یہ ایک چمتکار کے طور پر ہوا کے بعد بھی میری چھوٹی بہن پنکی میرے ساتھ مہم جوئی کرنے کی مخالفت نہیں کیا.
ایک دن اس کے دوستوں کے ساتھ میری بہن ہمارے گھر پر ایک رقص کی ریہرسل ہے جو وہ ان کے اسکول میں کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے تھے مشق کیا گیا تھا. چونکہ ہمارے گھر میں صرف تین کمروں میں تھے ہماری ہال کی سب سے بڑی تھی تاکہ وہ ہال میں ناچ رہے تھے. اور میں ایک کونے میں فرش پر جھوٹ بول کر ٹی وی دیکھ رہا تھا. میرے والد نے باورچی خانے میں گھر اور میری ماں پر نہیں تھا.
ان لڑکیوں کو شارٹ سکرٹ اور تنگ ٹی شرٹ جس میں رقص کے لئے ان کے کاسٹیوم بھی پہن رکھے تھے. اصل میں میں نے سکول کی وردی میں یا کپڑے میں سوائے سکرٹ میں میری بہن کبھی نہیں دیکھا ہے. لہذا میں نے اسے ایک نظر دیکھو کیا لیکن اس نے زیادہ توجہ نہیں ہے. جیسا کہ انہوں نے ناچ کر اور میں فرش پر پڑا ہوا تھا یہ ہوا کہ وہ ایک رقص کے قدم جس کے ان کے جسم کے ارد گرد کتائی کے شامل کرنے کی ضرورت ہے. تو یہ ان کا شارٹ سکرٹ کے فلوٹ بنایا اور ان کی رانوں نے انکشاف کیا ہے. میں اس نقطہ نظر کے ساتھ مارا گیا تھا. خوبصورت صاف سڈول رانوں اور ان نوجوان لڑکیوں کی ان کی جاںگھیا کی تنگ بتانے گدی کو دیکھنے کے لئے یہ بہت حیرت انگیز تھا. اب میں ایک جنسی زاویہ میں ان سب کو دیکھ کر شروع کیا لیکن جو زیادہ حیران کن تھا وہ سب لڑکیوں کو اپنی بہن رکن بہترین رانوں تھے کہ باہر گیا تھا.
اور یہ یہ ناممکن ہے اس سے میری منظر پر لینے کے لئے بنایا ہے. پنکی نے 5’4 کے ارد گرد کے وقت اونچائی کی ایک اچھی شخصیت تھے. اس کی رانوں کو ہموار بچھڑوں اور منصفانہ موٹی رانوں خاص طور پر دور ایک پتلی جاںگھیا کی طرف سے احاطہ گدا کے ساتھ بہت اچھی حالت میں تھے. میں کلپنا ان کو چھونے اور ان کی چاٹ اور بھی ان کے مہک کرنا شروع کر دیا. جیسا کہ ان کے جذبات کو بدتر بنا دیا ہے اور اس لمحے سے میری رائے اور نقطہ نظر یکسر تبدیل کر دیا گیا ہے.
اب میں اس جھول نوجوان تنگ ٹی شرٹ کی طرف سے منعقد سینوں پر تلاش کرنا شروع کر دیا. کچھ کے لئے اس کو دیکھ رہے ہیں جبکہ نئے خیالات میرے دماغ میں چل رہا کرنے کے بعد. میں اس کے اندرونی حصوں جو اس کی عمر کا ایک عام احساس ہے ہیں سونگھ کرنا چاہتے تھے. تو جلدی سے باتھ روم میں چلا گیا اور اس کی پہنا انڈرویر اٹھایا اور ان کی مہک شروع. یہ میرے لئے جنت کی طرح تھا.
میں نے اس چولی، جاںگھیا اور پیٹیکوٹ جمع ہے جبکہ سو اور مشت زنی کرنے کے لئے سونگھ کرنا شروع کر دیا. یقینا میں نے انہیں کبھی نہیں اٹھایا جب وہ پیریڈ اس پسینے کے ساتھ ملا اس کے اندام نہانی سے سیال کی بو میرے لئے ناقابل فراموش تھا. سب سے اچھی بات تھی ہم خوشبو وہ عمر ہے جس ميں بدبو بہت زیادہ متعلقہ بنایا میں کبھی استعمال نہیں ہے. تو میں صرف مہک میں بہت کچھ کرنا چاہتا تھا کے ساتھ مطمئن نہیں تھا، لیکن میں نے سوچ اور کے لئے اہم واقعہ اور ایک ٹھیک شبھ تہوار کے دن میں نے موقع ملا جیسا کہ میں نے کہا کے بعد ایک ماہ کی طرح میرے دماغ میں سوچ پر رکھا ہم نے درمیان میں سے تھے طبقے کے خاندان تو ہم ایک نیا کیمرہ خریدا جو میرے والد صاحب نے مجھے ایک موجود ہے اور صرف میں ہی اسے استعمال کرنے کا مجاز ہے کیونکہ یہ مہنگی (سمجھا جاتا ہے) تھا کے طور پر خریدا. میرے والد نے ہمیشہ مجھ سے کہا کہ تصویروں کی تعداد پر کنٹرول کے اوائل 2000 ء ہم سٹوڈیو جس میں اضافی رقم کی لاگت آئے گی میں تصاویر کے لئے تیار


Read more: http://sexykahaniya.biz/viewtopic.php?f=27&t=1056&sid=dc894c0e01cc398f5bd691562a78be75#ixzz3kHcSbJO9
Follow us:
@theadultstories on Twitter | theadultstories on Facebook

शीघ्र पतन कोई बिमारी नही है


शीघ्र पतन का मतलब है कि सेक्स के समय स्त्री के झड़ने से कहीं पहले झड़ जाना.
इस स्थिति में क्योंकि स्त्री को ओर्गास्म नहीं होता है इसलिए उसकी सेक्स की
चाहत अधूरी रह जाती है
और सेक्स की अधूरी चाहत से चिडचिडापन बना रहता है, किसी काम में मन नहीं लगता
और इस स्थिति में यदि किसी अन्य पुरुष उसकी और हाथ बढाये तो दूसरे पुरुष से
शारीरिक सम्बन्ध बन जाना स्वाभाविक है.

वैसे देखा जाय तो यह एक मानसिक रूप से ठीक हो जाने वाली बीमारी है
नीम हकीम से अपना इलाज करवाना मतलब अपना धन और स्वस्थ्य से खिलवाड़ करना होता
है.

टेंशन से दूर रहिये, यदि तम्बाकू और धूम्रपान का सेवन करते हो तो बंद कर
दीजिये
खाने पीने में भिगोई हुई दालें, पनीर, दूध, हरी सब्जिया, सलाद आदि की मात्र
बढा दीजिये
यदि हस्तमैथुन या सेक्स प्रतिदिन या एक दिन में अधिक बार करते हो तो ५ से ७
दिन में एक बार कर दीजिये. इस से यदि पहली बार जल्दी हो भी गया तो दूसरी बार
का टाइम बढ़ जाएगा.

जल्दी उत्तेजित मत होइए, एवं जब लिंग खडा हो जाये तो उसको अंडरवेअर में ऊपर
की ओर कर लीजिये,
देसी घी/नारियल का तेल/फेस क्रीम में से किसी की मालिश लिंग पर हलके हाथों से
कीजिये और हाथ का मूवमेंट लिंग के जड़ से सुपाडे की ओर होना चाहिए.

अपने मन को सुदृढ़ कीजिये, ओर विचार कीजिये कि आपको अभी नहीं हो रहा है. कुछ
देर ओर लगेगी......

सुपाडे को सूखा मत रहने दीजिये, इस पर ऊपर लिखे चिकनाई में से कोई सी लगाकर
चिकनाई बना कर रखिये.

देखिये कि आप खुद के साथ क्या कमाल कर पाते हैं?
दिन भर में १५ से २० गिलास पानी पीजिये, और कब्ज मत रहने दीजिये

जल्दी उत्तेजित मत होइए, एवं जब लिंग खडा हो जाये तो उसको अंडरवेअर में ऊपर
की ओर कर लीजिये,
अपने मन को दूसरी और मोड़ लीजिये ताकि उत्तेजना का असर कम हो जाए
एक बार लिंग के खडा होने के बाद कुछ देर को सेक्स क्रिया से दूर हो जाइए, इस
तरह से जब लिंग बैठ कर फिर खडा होगा तो स्खलन का समय बढ़ जायेगा.
शीघ्रपतन की हकीकत

सेक्स क्रिया में मानवों के बीच शीघ्रपतन नामक शब्द काफी अहमियत रखता है. यदि
इस शब्द की शाब्दिक व्याख्या करें तो शीघ्र गिर जाने को शीघ्रपतन कहते हैं।
लेकिन सेक्स के मामले में यह शब्द वीर्य के स्खलन के लिए, प्रयोग किया जाता
है। पुरुष की इच्छा के विरुद्ध उसका वीर्य अचानक स्खलित हो जाए, स्त्री सहवास
करते हुए संभोग शुरू करते ही वीर्यपात हो जाए और पुरुष रोकना चाहकर भी
वीर्यपात होना रोक न सके, अधबीच में अचानक ही स्त्री को संतुष्टि व तृप्ति
प्राप्त होने से पहले ही पुरुष का वीर्य स्खलित हो जाना या निकल जाना, इसे
शीघ्रपतन होना कहते हैं। इस व्याधि का संबंध स्त्री से नहीं होता (क्योंकि
स्त्रियों में स्खलन की क्रिया नहीं पायी जाती), यह पुरुष से ही होता है और
यह व्याधि सिर्फ पुरुष को ही होती है। शीघ्र पतन की सबसे खराब स्थिति यह होती
है कि सम्भोग क्रिया शुरू होते ही या होने से पहले ही वीर्यपात हो जाता है।
सम्भोग की समयावधि कितनी होनी चाहिए यानी कितनी देर तक वीर्यपात नहीं होना
चाहिए, इसका कोई निश्चित मापदण्ड नहीं है। यह प्रत्येक व्यक्ति की मानसिक एवं
शारीरिक स्थिति पर निर्भर होता है। वीर्यपात की अवधि स्तम्भनशक्ति पर निर्भर
होती है और स्तम्भन शक्ति वीर्य के गाढ़ेपन और यौनांग की शक्ति पर निर्भर
होती है। स्तम्भन शक्ति का अभाव होना शीघ्रपतन है। बार-बार कामाग्नि की आंच
(उष्णता) के प्रभाव से वीर्य पतला पड़ जाता है सो जल्दी निकल पड़ता है। ऐसी
स्थिति में कामोत्तेजना का दबाव यौनांग सहन नहीं कर पाता और उत्तेजित होते ही
वीर्यपात कर देता है। यह तो हुआ शारीरिक कारण, अब दूसरा कारण मानसिक होता है
जो शीघ्रपतन की सबसे बड़ी वजह पाई गई है। एक और लेकिन कमजोर वजह और है वह है
हस्तमैथुन. हस्तमैथुन करने वाला जल्दी से जल्दी वीर्यपात करके कामोत्तेजना को
शान्त कर हलका होना चाहता है और यह शान्ति पा कर ही वह हलकेपन तथा क्षणिक
आनन्द का अनुभव करता है। इसके अलावा अनियमित सम्भोग, अप्राकृतिक तरीके से
वीर्यनाश व अनियमित खान-पान आदि।


Read more: http://sexykahaniya.biz/viewtopic.php?f=24&t=722&sid=dc894c0e01cc398f5bd691562a78be75#ixzz3kHc0r4bO
Follow us:
@theadultstories on Twitter | theadultstories on Facebook